Kya Miya Biwi Ek Saath Ghusl Bath Kar Sakte Hai | Husband Wife Ka Akhty Ghusal Karna Kaisa Hai | Ghusl – Bathing Ka Sunnat Aur Mukammil Tariqa

 میاں بیوی ایک ساتھ نہا سکتے ہیں 

Kya Miya Biwi Ek Saath Ghusl Bath Kar Sakte Hai | Husband Wife Ka Akhty Ghusal Karna Kaisa Hai | Ghusl - Bathing Ka Sunnat Aur Mukammil Tariqa

کیا میاں بیوی ایک ساتھ غسل کر سکتے ہیں وہ غسل خانے میں اسلام اس کے بارے میں کیا کہتا ہے دین اس کے بارے میں کیا کہتا ہے قرآن اس کے بارے میں کیا کہتا ہے حدیث کے بارے میں کہتی ہے 

جواب 

میاں بیوی ایک ساتھ غسل خانے میں بالکل برہنہ ہو کر نہا سکتے ہیں لیکن یہ خلاف ادب ہے ایک دوسرے کی شرمگاہ کو دیکھنے سےنسیان کی بیماری پیدا ہو جاتی ہے بھولنے کی بیماری پیدا ہو جاتی ہے اس لئے بہتر یہ ہے کہ نہاتے وقت ایک دوسرے کی شرمگاہ  نہ دیکھی جائے

 نہاں سکتے ہیں اس میں کوئی حرج کی بات نہیں ہے

I Covered these points in the video

> husband aur wife ka akhty ghusal karna kaisa hai
> husband wife
> ghusal
> aik sath gusal
> kia miya biwi ikathay gusal kar sakty hain
> ghusal ka tarika
> ghusal ka tariqa
> ikathay gusal krna
> miyan biwi ka ek sath gusal karna
> kya miyan biwi ek saath ghusl bath kar sakte hain
.> shohar aur biwi ka aik sath gusal karna
> ghusal ka tareeqa
> wife husband ka ek sath nahana kaisa h
> ghusal ke faraiz
.> ikathay gusal
> gusal
> waif hasband ghusal kab hota

Spread the love

Leave a Comment

%d bloggers like this: